جامعہ سندھ جامشورو کے سینڈیکیٹ کا 199 واں اجلاس وائس چانسلراور سینڈیکیٹ کے چیئرمین پروفیسر ڈاکٹر فتح محمد برفت کی زیر صدارت ان کے آفس میں منعقد ہوا۔ اجلاس کے آغاز میں وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر فتح محمد برفت نے سینڈیکیٹ کے تمام معزز ممبران کو خوش آمدید کہا۔اس کے بعد ایجنڈا میں شامل مختلف آئٹمز پر غور کے بعد اہم فیصلے کیے گئے۔ اجلاس میں جامعہ سندھ کے مختلف تدریسی انسٹیٹیوٹس کے ڈائریکٹرزاور مختلف تدریسی شعبوں کے چیئرمینزکی 3 سال کے لیے مقرری کی منظوری دی گئی، جس کے تحت پروفیسر ڈاکٹر عبدالوسیم شیخ کو انسٹیٹیوٹ آف میتھامیٹکس اینڈ کمپیوٹر سائنس، پروفیسر ڈاکٹر نسیم اسلم چنہ کو انسٹیٹیوٹ آف بایو کیمسٹری، پروفیسر ڈاکٹر حبیب اللہ نقوی کو انسٹیٹیوٹ آف بایوٹیکنالوجی اینڈ جینیٹک انجنیئرنگ، پروفیسر ڈاکٹر مصباح بی بی قریشی کو انسٹیٹیوٹ آف جینڈر اسٹڈیز، پروفیسر ڈاکٹر محمد حسن اگھیم کو سینٹر فار پیور اینڈاپلائیڈ جیالوجی ، پروفیسر ڈاکٹر عبدالستار شاہ کو انسٹیٹیوٹ آف بزنس ایڈمنسٹریشن کا تین سال کے لیئے ڈائریکٹر مقرر کرنے کی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں جامعہ سندھ میں بینکنگ اینڈ فنانس شعبہ قائم کرنے کی بھی منظوری دی گئی ۔ اجلاس میں یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے گریڈ 2 سے 16تک کے تیار کیے گئے سروس اسٹرکچر کی تعریف کرتے ہوئے اس کا جائزہ لینے کے لیے سینڈیکیٹ کی جانب سے 5رکنی کمیٹی جوڑی گئی۔ اجلاس میں افسران کی ترقی اور ٹائم اسکیل کے لیئے سینڈیکیٹ کے ممبران پر مشتمل کمیٹی جوڑی گئی جو اس سلسلے میں تمام جلد اپنی سفارشات تیار کر کے پیش کرے گی۔اجلاس میں ان سمیت دیگر اہم فیصلے بھی کیے گئے۔ اجلاس میں نامزد اور منتخب ممبران نے شرکت کی جن میں سندھ ہائی کورٹ کے چیف جسٹس کی جانب سے نامزد ممبرسندھ ہائی کورٹ کے جج جسٹس عدنان اقبال چودھری، ہائیر ایجوکیشن اسلام آباد کے چیئرمین کی جانب سے نامزد ممبر شاہ عبداللطیف یونیورسٹی خیرپور کی سابقہ وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر نیلوفر شیخ، جسٹس سائیں ڈنو میتلو، مہران یونیورسٹی آف انجنیئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کے سابق وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر عبدالاحد ابڑو، گورنمنٹ کالج یونیورسٹی حیدرآباد کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر ناصر الدین شیخ، گورنمنٹ لا کالج حیدرآباد کے پرنسپل ایڈووکیٹ نثار احمد درانی، جامعہ سندھ کی فیکلٹی آف لا کے ڈین مسٹر جھمٹ جیٹھانند، منتخب ممبران پروفیسر ڈاکٹر عرفانہ بیگم ملاح، ڈاکٹر رفیق احمد لاشاری، مسٹر جمشید بلوچ، مسٹر اسد اللہ بلیدی شامل تھے۔ اجلاس کی کارروائی کی ذمہ داریاں جامعہ سندھ کے رجسٹرار اور سینڈیکیٹ کے سیکریٹری ڈاکٹر امیر علی ابڑو نے سرانجام دیں ۔