کورونا وائرس کی وبا کے پیش نظر 6 ماہ کے لاک ڈاؤن کے باعث تعلیمی ادارے بند رہنے کے بعد پہلی بار جامعہ سندھ جامشورو کی جانب سے 12 اکتوبر سے امپروئر و فیلیوئر طلباء سے سیمسٹر امتحانات کیمپس پر لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اس سلسلے میں رجسٹرار غلام محمد بھٹو کی جانب سے جاری کردہ سرکیولر کے مطابق امتحانی ہال میں پہنچنے سے قبل طلباء و امتحانی عملہ لازمی طور پر فیس ماسک پہنے گے، جبکہ امتحانی مراکز میں 6 فٹ فاصلے پر کرسیاں لگانے کا بندوبست بھی کیا گیا ہے۔ دوسری جانب شعبہ ٹرانسپورٹ کی جانب سے 12 اکتوبرسے شروع ہونے والے پہلے سیمسٹر کے امپروئر و فیلیوئرطلباء کے امتحانات کے دوران پوائنٹ بسیں چلانے کا شیڈیول اورکورونا سے بچنہ کے لیے حکومتی ایس او پیز کے حوالے سے طلباء و طالبات کو ہدایات جاری کی گئی ہیں۔ ٹرانسپورٹ انچارج رحمت اللہ شر کی جانب سے جاری کردہ شیڈیول کے مطابق امپروئر و فیلیوئر کے سیمسٹر امتحانات کے دوران مختلف روٹس پر پوائنٹ بسیں چلائی جائیں گی۔ بسیں صبح کو 7:20 پر زیل پاک، بدین اسٹاپ، لطیف آباد، پونا 7 اور پونا 5، حسین آباد، ایگریکلچر کامپلیکس جی او آر قاسم آباد شاہین ڈیری، علی پیلس، شیدی گوٹھ، سحرش نگر، نسیم نگر چوک، عملدار چوک، ھیپی ھومز، چانڈیا گوٹھ، گلستان سجاد، ماروی ٹاؤن/ ہونڈا پیلس، شورا گوٹھ، چینل، ہالا ناکا، پھلیلی، مارکیٹ، سٹی گیٹ اور اولڈ کیمپس سے چلیں گی۔ بیان کے مطابق یونیورسٹی کی پوائنٹ بسوں میں صرف ان طلباء و طالبات کو سفر کی سہولت ہوگی، جن کے پیپر ہوں گے اور وہ بسوں میں سوار ہونے سے قبل ایڈمٹ کارڈ/ امتحانی سلپ لازمی طورپر اسٹاف کو دکھائیں گے۔ بیان میں امیدواروں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ سندھ حکومت کی جانب سے کورونا وائرس سے بچنے کے لیے حکومت کی جانب سے جاری کردہ ایس او پیز پر مکمل عملدارآمد کریں اور مارک کا استعمال لازمی کریں۔ ماسک نہ پہننے والے طلباء پوائنٹ بسوں میں سفر نہیں کر سکیں گے۔